اپرچترال میں بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ کیا جاۓ۔۔ سابق منیجر ظہیرالدین۔

اپر چترال (چترال ایکسپریس۔۔جمشیداحمد) موڑکھو کے معروف شخصیت سابق منیجر ظہیرالدین نے کہا ہے کہ سابقہ دورحکومتوں میں بیرون ملکوں کی تعاون سے چترال کوغزی کے مقام پر ایک بڑے پیمانے پر پاورہاوس تعمیر ہوٸی ہے حکومتی اداروں نے اس پاور ہاوس کی تعمیر کےلیے اربوں روپے کی کثیر رقم خرچ کیے ہیں۔مگر افسوس کا مقام یہ ہے کہ مزکورہ پاورہاوس تعمیر کے کچھ عرصے تک صحیح کام کرتا رہا اور چترال والوں کو کچھ نہ کچھ روشنی میسر ہوتی رہی پاور ہاوس کی تعمیر کے چند سالوں بعد چترال میں بجلی کا نظام ابتر ہو چکی ہے اور چترال کے عوام آۓ دن لوڈ شیڈنگ سے تنگ اچکے ہیں حصوصاً موڑکھو تورکھو کے عوام بدترین لوڈ شیڈنگ کا شکار ہیں عوام اس بات کو نہیں سمجھتے ہیں کہ اخر اس میں ماجرا کیا ہے یا یہ محکمہ والوں کی غفلت ہے یا کچھ سیاسی چال بازیاں ہیں اس بات پر عوام حیران اور پریشان ہیں عوام بھاری بل ادا کررہی ہیں اور بجلی ناپید ہے۔انہوں نے کہا کی بچوں کی پڑھاٸی متاثر ہورہے ہیں بچوں کی امتحانی رزلٹ بھی خراب ہو رہے ہیں اور یہ معاملہ انتظامیہ والوں کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ محکمے والوں کو ان بورڈ لیکر اس ناجاٸز اور ناروا لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کریں۔اوراس سلسلے میں اپنا کردارادا کرے ۔اُنہوں نےتحصیل موڑکھو اور تورکھو کے عوام  کی طرف سےمتعلقہ وزارت اور صوباٸی حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس ناروا اور ناجاٸز لوڈ شیڈنگ سے موڑکھو اور تورکھو کے عوام کو نجات دلاٸی جاۓ۔۔۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔