نوجوان نسل کو منشیات سے نجات دلانا ہماری ترجیحات میں شامل ہے*۔ڈی پی او صلاح الدین کنڈی

نوجوان نسل اور طلباء کو آئس جیسے خطرناک نشہ سے بچاکر ان کا بہتر مستقبل بنایا جائے

چترال (چترال ایکسپریس)ڈی۔پی۔او آفس بلچ لوئر چترال میں ڈی۔پی۔او لوئر چترال صلاح الدین کنڈی کے زیر صدارت پولیس افسران کے ساتھ کرائم میٹنگ کا انعقاد کیا گیا جس میں ایس۔پی۔انوسٹگیشین محمد ستار خان, ڈی۔ایس۔پی۔ہیڈکوارٹر احمد عیسی, ڈی۔ایس۔پی۔لیگل شیر محسن الملک, ایس ڈی۔ پی۔اوز، جملہ ایس ایچ اوز , انچارچ ٹریفک وارڈن پولیس اور تفتیشی افسران نے شرکت کی۔

ڈی۔پی۔او نے انسپکٹر جنرل اف پولیس خیبر پختونخواہ اختر ِحیات خان اور ریجنل پولیس افیسر ملاکنڈ ناصر محمود ستی کے احکامات و ہدایات پر تفصیلی بریفنگ دی۔

جس کے بعد ڈی۔پی۔او  نے کرائم چارٹ کا تقابلی جائزہ لے کر جرائم کی شرح، نوعیت، عدم گرفتار ملزمان، منشیات کے خلاف کاروائیوں اور جرائم برخلاف مال و اشخاص کے حوالے سے ایس۔ایچ۔اوز و تفتیشی افسران کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔

ڈی۔پی۔او صلاح الدین کنڈی نے مستقبل کی پالیسی کے حوالے سے احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ رپورٹ کنندگان کی رپورٹ پر بلا تاخیر مقدمہ درج رجسٹر کریں اور مقدمہ میں میرٹ پر تفتیش یقینی بنائیں۔

منشیات فروشوں کے خلاف موثر کاروائی عمل میں لا کر ان کے مزید لنکس کا سراغ لگا کر ان پر بھی ہاتھ ڈالیں،جبکہ تفتیشی افسران بھی میرٹ پر تفتیش سے ایسے افراد کو قرار واقعی سزا دلوائیں۔

انہوں نے کہا کہ چترال میں سیاحت کے فروغ کے لئے لوئر چترال پولیس کے استعداد کار میں مزید اضافہ کیا جائے گا۔مجرمان اشتہاریوں کی گرفتاری پر خصوصی توجہ دیں۔

انہوں نے دوران ڈیوٹی حفاظتی اقدامات بلٹ پروف جیکٹ و ہلمٹ کے استعمال کو یقینی بنانے پرزور دیا۔اورکم سن ڈرائیورز/ موٹرسائکلسٹ,غیر نمونےکے نمبر پلیٹ ,کالے شیشوں اور ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے سلسلے میں انچارچ ٹریفک وارڈن پولیس کو خصوصی احکامات دیں۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔