داد بیداد…شہید ہونے والی بچی…ڈاکٹر عنایت اللہ فیضی

فلسطین کے ہسپتا لوں پر بمباری سے 5دنوں میں 4ہزار معصوم بچے اور بچیاں شہید ہو گئیں عودہ ان میں سے 3سال کی خوب صورت بچی تھی ان کی لا ش ہسپتال کے ملبے میں لو ہے کی چارپا ئی کے ساتھ مل گئی لا ش کو اٹھا کر جب مٹی، خون اور گرد غبار کو صاف کیا گیا تو بچی کے چہرے سے نور کے فوارے پھوٹنے لگے عالمی ریڈ کراس کے عیسائی ڈاکٹر اس بچی کی لا ش کی خو شبو سے بہت متاثر ہوئے عیسائی ڈاکٹر نے ایک اخبار نویس کو سٹیلا ئیٹ فون پر بتا یا کہ اس بچی کو اس بات سے کوئی عرض نہیں تھا کہ امریکہ کے صدارتی انتخا بات میں ڈیمو کریٹک پارٹی کو جتوا نے کے لئے عودہ جیسی 4000بچوں اور بچیوں کی لا شیں درکار تھیں اس معصوم بچی کو یہ بھی معلوم نہیں تھا کہ مزید کتنے فلسطینی بچوں اور بچیوں کا خون بہا نے کے بعد ڈیمو کریٹک پارٹی انتخا بات جیتنے کی پوزیشن میں ہو گی غزہ میں حا لیہ جنگ کے دوران شہید ہونے والے 10ہزار فلسطینیوں میں سے کسی کو اس بات کا علم نہیں تھا کہ امریکہ کے آنے والے صدارتی انتخا بات میں ری پبلکن امیدوار ٹرمپ کو ہرانے کے لئے غزہ میں مسلما نوں کا قتل عام کیا جا رہا ہے اس سے پہلے ری پبلکن پارٹی چار بار افغا نستان کی جنگ اور اسامہ بن لا دن کے نا م کا سہا را لیکر انتخا بات جیت چکی تھی ڈیمو کریٹک پارٹی بھی امریکی ووٹروں کی ہمدردیاں حا صل کرنے کے لئے مسلمانوں کے خلا ف اپنی جنگوں کا سہا را لے چکی ہے غزہ پر حملہ اور فلسطینی ابادی کا محا صرہ اس سلسلے کی ایک کڑی ہے جنوری 2024میں امریکہ کے اندر صدارتی انتخا بات کی مہم کا پہلا مر حلہ شروع ہونے والا ہے تاتاری فوج اور ہلا کو خان کو تاریخ میں ظلم اور درندگی کی وجہ سے بد نا م کیا گیا ہے آج کوئی غور کرنے والا اس پر غور کرے تو ہلا کو خان اور تاتاری فوج کو ظا لم اور جا بر کہنے سے پہلے 100بار سوچیگا ہلا کو خان کے زما نے میں لڑا ئی دو فوجوں کے درمیاں ہوتی تھی تلوار، نیزہ، تیر و کما ن اور برچھی لیکر مقا بلے پر آنے والا ما را جا تا تھا، ہسپتال میں زیر علا ج عورتوں، بوڑھوں، بچوں اور بچیوں پر ہلا کو خان اور تاتاری لشکر نے کبھی حملہ نہیں کیا تھا یہی وجہ ہے کہ اقوام متحدہ کے سکر ٹری جنرل انتو نیو گوتریس اور پوپ فرانسیس نے بھی ہسپتا لوں پر یہو دیوں کی وحشیا نہ بمباری کو انسا نی حقوق اور جنگی اصو لوں کی سنگین خلا ف ورزی قرار دیا ہے جر منی، فرانس، برطانیہ، روس اور بھا رت میں اس طرح کے ظلم و جبر کے خلا ف مظا ہرے ہوئے ہیں دنیا کے مہذب لو گ اس ظلم کے خلا ف آواز اُٹھا رہے ہیں اور امریکہ کی مذمت کر رہے ہیں جس کی ایک سیا سی جما عت نے یہو دی سرمایہ داروں سے چندہ اور یہودیوں کے ہمدردوں سے ووٹ لینے کے لئے فلسطینیوں کے قتل عام کا ایسا منصو بہ بنا یا ہے جس میں ہسپتال کے اندر زیر علا ج مریض بھی نشا نے پر آرہے ہیں آج دشمن کی افواج نے غزہ میں القدس ہسپتال کو خا لی کرنے کا مطا لبہ کیا ہے دشمن کا کہنا ہے کہ ہم اس ہسپتال پر بمباری کرر ہے ہیں اگر مریضوں کو بچا نا ہے تو ہسپتال کو خا لی کرو عالمی ریڈ کراس کا بیان آیا ہے کہ ہسپتال میں 1600مریض داخل ہیں دشمن نے چاروں طرف سے محا صرہ کیا ہوا ہے ہسپتال کو خا لی کرنا ممکن نہیں، میں سوچتا ہوں کہ یقینا ہلا کو خان بھی جو بائیڈن اور نتین یا ھو جیسا ظا لم نہیں تھا اس نے معصوم شہریوں اور مریضوں کا قتل نہیں کیا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔