چترال میں نوجوانوں کے لیے ریجنل یوتھ کنونشن کا انعقاد کیا گیا۔

چترال: آغاخان رورل سپورٹ پروگرام چترال کے زیر اہتمام مقامی ہوٹل میں یورپین یونین کے تعاون سے  یوتھ کنونشن کا انعقاد کیاگیا۔ کنونشن سے میں سینکڑوں کی تعداد میں مقامی خواتین و حضرات نے شرکت کی۔  ڈپٹی کمشنر لوئر چترال محمد عمران خان یوسفزئی  کے ساتھ ساتھ آکاہ کے آر پی ایم ، یونیورسٹی آف چترال کے پروفیسرز، سول سوسائٹی کے نمائندے اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شامل تھے۔

مقررین نے نوجوانوں  کی ترقی کے لیے اے کے آر ایس پی کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات کو خراج تحسین پیش کی ۔ پینل ڈسکشن میں ڈاکٹر منصور اللہ بیگ ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ  منیجمنٹ سائنسز یونیورسٹی آف چترال نے نوجوانوں کے لیے ڈیجیٹل سکلز کی فراہمی کو اے کے آر  ایس پی کے لیے سنگ میل قرار دیا جبکہ ریسرچ اور ملازمت کے مواقع فراہم کرنے پر ڈاکٹر حفیظ اللہ نے اے کے آر  ایس پی کے کردار کو سراہا۔ ڈپٹی کمشنر لوئر چترال نے اپنی خطاب میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے بھر پور تعاون کا یقین دلایا اور ساتھ ہی اے کے آرایس پی کی طرف سے شروع کئے گئے ڈیجیٹل اسکلز کورسز کو منظم انداز میں چلانے پر ان کو داد دی۔

کنونشن میں گروپ ورک کے ذریعے سال 2024 کے لیے روٹ میپ کا خاکہ بھی تیار کیا گیا جس کے رو سے نوجوانوں کے لیے نوکری کے مواقع، فری لانسنگ اور ڈیجیٹل سکلز کی دستیابی سمیت صحتمندانہ سرگرمیوں کو فروغ دینا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ کنونشن کے ساتھ ساتھ مقامی خواتین و حضرات نے اسٹالز لگائے تھے جس میں انواع و اقسام کے مقامی سطح پر تیار کی گئی مصنوعات اور طرح طرح کے کھانے دستیاب تھے۔ مقامی آرٹ اور میوزک کے اسٹال بھی وہاں موجود تھے۔ مہمانوں نے اسٹالز میں زیادہ دلچسپی دیکھائی اور اس کاوش کو سراہا کہ اس طرح کے کنونشن سے نوجوانوں کو اگے بڑھنے کے مواقع ملیں گے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔