چترال ٹاؤن گولدور، گھر میں سیلنڈر پھٹنے سے 9افراد زخمی،پشاور منتقل

چترال (چترال ایکسپریس)اتوار کے دن دوپہر کے وقت چترال ٹاؤن کے گولدور میں ایک گھر کے اندر واقع مدرسے کے کمرے میں سیلنڈر کے پھٹ جانے کے نتیجے میں تین بچوں سمیت چھ خواتین جل گئےجن میں سات کو پشاور منتقل کردئیے گئے۔ ڈپٹی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال چترال کے مطابق زخمیوں کے جسم 60فیصد جل گئے ہیں جن کایہاں پر علاج ممکن نہ تھا،

اس موقع پر، ڈپٹی کمشنر لوئر چترال محمد عمران خان یوسفزئی، ڈی پی اولوئر چترال قمر حیات خان ،ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ہیڈکوارٹرز عدنان حیدر ملوکی اور ڈی۔ایس۔پی ہیڈکوارٹرز اقبال کریم موقع پر ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال چترال میں موجود تھے اور زخمیوں کو فراہم کی جانے والی طبی امداد کے سرگرمیوں کی نگرانی کی۔

ہسپتال کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ میں موجود ڈپٹی کمشنر لویر چترال محمد عمران خان نے کہاکہ سب سے ذیادہ متاثر زخمی کا جسم 26فیصد جلا ہوا ہے اور اس ہسپتال میں برن کا علاج ممکن نہ ہونے کی وجہ سے پشاور منتقل کئے جارہے ہیں۔ زخمیوں کو پشاور منتقل کرنے کے لئے ایمبولنس گاڑیوں کی تیل کی عدم دستیابی کی وجہ سے ڈی سی لویر چترال نے اپنی جیب سے چندہ دیا جس پر موقع پر موجود لوگوں نے بھی چندے جمع کردئیے اور زخمیوں کو پشاورمنتقل کردئیے گئے۔زخمیوں میں صفوان عالم ولد لغل بادشاہ عمر 8سال، سات سالہ محمد المہدی ولد لغل بادشاہ، آٹھ سالہ فریحہ بی بی دختر ذاکر اللہ، سات سالہ محمدجان ولد ذاکراللہ، چھ سالہ سدرہ بی بی دختر شفیق اللہ، دو سالہ فاطمہ بی بی دختر عنایت اللہ، ح بی بی دختر عنایت اللہ (35سالہ) اور ف ناز وزوجہ ریحا ن اللہ، ایم بی بی دختر عنایت اللہ (13سالہ)شامل ہیں۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔