اپر چترال جینڈر ایکولٹی الائنس (GETA) کا قیام عمل میں لایا گیا۔

اپرچترال (ذاکرمحمدزخمی)اپر چترال جینڈر ایکولٹی الائنس (GETA) کا قیام عمل میں لایا گیا۔
آغا خان رورل سپورٹ پروگرام چترال اپر کے بیسٹ فار ویئر پراجکٹ کے زیر اہتمام کنیڈین حکومت کی مالی معاونت سے اپر چترال میں خواتین کو سماجی و معاشی خود مختاری اور دوسرے مسائل کے حل میں مدد فراہم کرنے کے سلسلے ،،اپر چترال جینڈر ایکولٹی الائنس،، (GETA) کا قیام عمل میں لایا گیا ۔اس سلسلے مختلف طبقہ ہائے فکر کے لوگوں کی ایک نشست مقامی ہوٹل میں منعقد ہوا جس میں سول سوسائٹی کے افراد، وکلا برادری کے نمائندے،سرکاری اور غیرسرکاری اداروں کے افراد ،میڈیا کےنمائندے اور مرد خواتین مختلف علاقوں سے کثیر تعداد میں شرکت کی۔مشاورت کے بعد خاتون ایڈوکیٹ عابدہ یونس کو چیرپرسن جبکہ رحمت علی کو جنرل سکرٹری مقرر کیا گیا اور کابینہ میں تمام مکاتب فکر کے افراد کو نمائندگی دی گئی۔پینیل ڈسکشن میں خواتین کو درپیش مختلف مسائل پر بحث مباحثے ہوئے ۔ شرکاء نے کہا کہ چترال میں خواتین کوبنسبت دوسرے علاقوں کے بہت سارے حقوقِ حاصل ہیں جو مقامی روایات،تیذیب اور تمدن کی پاسداری کرتے ہوئے اپنے فرائض نبھا رہے ہیں جو کہ خوش ائیند ہے تاہم بعض امور ایسے ہیں جس میں بہتری لانے کی اشد ضرورت ہے۔ اس سلسلے میں  مختلف تجاویز پر اتفاق کیا گیا ۔جینڈر ایکولٹی الائنس کمیٹی کا مقصد صنفی امتیاز کے خاتمے اور مساوات کے فرہمی میں مثبت کردار ادا کرنا ہے جن میں مرد اور خواتین کو فیصلہ سازی اور کاروبار وغیرہ میں یکسان مواقع کی فرہمی کو یقینی بنانا ہے۔کورٹ کیچہری میں قانونی پیچیدگیوں میں معاونت کے لیے قانونی ماہرین اور بےغیر معاوضے وکلا کی فراہمی وغیرہ کے بارے بامقصد گفتگو ہوئی۔اور تجربات شئیر کیے گئے۔اس موقع پر ایریا منیجر آغا خان رورل سپورٹ پروگرام عطااللہ اور اور منیجر سول سوسائٹی شائیستہ جبین نےکمیٹی کے قیام اور اغراض و مقاصد پر تفصیلی بریفنگ دی ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔