تنظیم اساتذہ پاکستان ضلع چترال لوئر کا اجلاس۔

چترال (چترال ایکسپریس)25فروری بروز اتوار ‘المودودی آڈیٹوریم ضلع چترال’ میں ارکانِ تنظیمِ اساتذہ کا اجلاس ہوا۔اجلاس کا آغاز تلاوتِ کلامِ پاک کے ساتھ ہوا۔
اسٹیچ سیکٹری عبد العزیز خان نے مولانا سفیر اللّہ کو دعوت دی جس نے درس قرآن سے محفل کو منّور کیا۔
اس کے بعد “تعلیم کے ذریعے تطہیرِ افکار اور تعمیرِ سیرت” کے موضوع پر امیرِ جماعت اسلامی ضلع چترالوئر  مولانا جمشید احمد حاضرین سے مخاطب ہوئے۔
“تہذیبی کشمکش میں علم و تحقیق کا کردار” کے موضوع پر لیکچررّ سراج محمد نے پُر مغز گفتگو کی۔
صدر تنظیمِ اساتذہ چترال پائین خالد ظفر نے اپنے خطاب میں بائفر کیشن میں تنظیم کا اصولی موقف پیش کیا۔ اس سلسلے میں یک سرِ مو زیادتی اور نہ ہی لچکداری دکھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔ دوسرے اضلاع میں جو طریقہ کار اپنائے گئے ہیں اور جو اِن ہر دو نو تقسیم شدہ اضلاعِ (چترال بالا و پائین) کے لئے مرتب کئے گئے اصول و قواعد ہیں، اُن پر من و عن عملدرآمد یقینی بنانے پر زور دیا۔
مختلف شعبہ جات نے اپنے رپورٹ اجتماع کے سامنے پیش کی اور آخر میں اسٹیچ سیکٹری نے جب اوپن فورم مہیا کر دیا تو ہال میں موجود اساتذہ نے اپنے قیمتی آراء اور مثبت تجاویز پیش کئے۔

سابق صدر تنظیم اساتذہ چترال لوئر ضیاء الدین استاد کے دعایا کلمات کے ساتھ اجلاس اختتام پذیر ہوا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔