اپر چترال میں بجلی کی بندش سے عوام اور تعلیمی ادارے بھی بری طرح متاثر ہوئے ہیں ۔عطاالرحمن یوتھ کونسلر بونی ۔

بجلی فوری بحال نہ کرنے کی صورت میں بھر پور احتجاج کیا جائیگا۔

اپر(ذاکرمحمدزخمی)بونی اپر چترال کے یوتھ کونسلر اور نوجوان سوشل ورکر عطا الرحمٰن نے اپک اخباری بیان کے ذریعے اس بات پر شدید تشویش کا اظہار کیا ہے کہ عرصہ دراز سے اپر چترال میں بجلی کی طویل ترین بندش کا سلسلہ جاری ہے اس سے نہ صرف عوام الناس رمضان کے مبارک مہینے میں  تکلیف و اذیت میں مبتلا ہیں بلکہ یہ بات سب بخوبی جانتے ہیں کہ انٹر نیٹ کے بغیر تعلیم کے نظام بھی بری طرح متاثر ہے اور جملہ تعلیمی نظام انٹرنیٹ سے منسلک ہوچکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جب بجلی نہیں تو نیٹ نہیں اور نیٹ نہیں تو تعلیم متاثر۔اپر چترال میں بجلی کی طویل ترین لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے طلباء طلبات کے پڑھائی متاثر اور مستقبل تاریک ہونے کا خدشہ ہے۔گزشتہ دس سالوں سےضلع اپر چترال کے تعلیمی ماحول کو قصداً عمداً متاثر کرنے کی دانستہ کوشش سیاسی اور انتظامی بدعنوانی کے سوا کچھ نہیں۔ یہ علاقے کو جدید ٹیکنالوجی تک رسائی سے محروم رکھنے کی سازش بھی ہے۔اپر چترال میں بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ ادارے اور انتظامی نااہلی کی منہ بولتا ثبوت ہے۔عطا الرحمٰن نے کہا کہ ایک ہفتے کے اندر بجلی بحال نہ کی گئی تو اپر چترال کے طلباء وطالبات اور ان کے متعلقین سمیت دھرنے اور احتجاج پر مجبور ہونگے۔اس کے تمام زمہ داری متعلقہ اداروں پر عاید ہوگی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔