پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ وی سی یونیورسٹی آف چترال کے اعزاز میں الوداعی افطار پارٹی

چترال(چترال ایکسپریس)وائس چانسلر یونیورسٹی آف چترال پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ کا ٹینیور مکمل ہونے کے موقع پر چترال یونیورسٹی ٹیچرز ایسوسی ایشن (CUTA) کی جانب سے ان کے اعزاز میں الوداعی افطار ڈنر اور تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب کی نظامت لیکچرر حفیظ اللہ  کر رہے تھے اور ڈاکٹر عبادت الرحمن نے تلاوت قرآن سے تقریب کا باقاعدہ آغاز کیا۔ تقریب میں یونیورسٹی کے اساتذہ ، مختلف شعبہ جات کے سربراہان کی بڑی تعداد کے علاوہ ایڈیشنل رجسٹرار ڈاکٹر محمد صاحب خان  اور وائس چانسلر کے سیکرٹری شفیق احمد  بھی موجود تھے ۔

اس موقع پر چترال یونیورسٹی ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صدر بشارت حسین نے یونیورسٹی فیکلٹی کی طرف وائس چانسلر کو انتہائی نامساعد حالات کے باوجود یونیورسٹی آف چترال کے مسائل حل کرنے اور یونیورسٹی کو آگے لے جانے کے اقدامات کو سراہتے ہوئے وائس چانسلر  کو خراج تحسین پیش کیا اور ان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ وائس چانسلر  نے یونیورسٹی آف چترال کے مسائل حل کرتے ہوئے یونیورسٹی کو ایک مضبوط بنیاد فراہم کی ہے۔ ان اقدامات سے  یونیورسٹی کے شاندار مستقبل کا آغاز ہوا ہے۔انہوں نے خاص طور پر یونیورسٹی کے ملازمین کی سروس کے حوالے سے موجود مسائل ذاتی دلچسپی لے کر حل کرنے پر تمام سٹاف کی طرف سے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ  کا شکریہ ادا کیا۔ اس کے ساتھ ساتھ یونیورسٹی کے تمام ڈیپارٹمنٹس میں ایم فل پروگرام کا اجراء ایک بڑی کامیابی ہے۔ وائس چانسلر  کے  دور میں یونیورسٹی کی تعمیر کے لئے زمین کا حصول اور تعمیراتی کام کے آغاز کا کریڈٹ بھی انہی کو جاتا ہے۔

اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے لیکچرر انگلش ظہور الحق دانش نے وائس چانسلر ڈاکٹر ظاہر شاہ  کی وضع داری اور شرافت کا خصوصی ذکر کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ  متفرق معاملات میں اختلاف رائے کے باوجود  وائس چانسلر ڈاکٹر ظاہر شاہ  نے ان دفتری معاملات کو کبھی ذاتی تعلقات پر حاوی ہونے نہیں دیا اور ہمیشہ اختلاف رائے کو خندہ پیشانی سے قبول کیا اور چھوٹے بڑے ہر ایک کے دل میں جگہ بنائی۔ وائس چانسلر ڈاکٹر ظاہر شاہ  کو فیکلٹی کی طرف سے یادگاری شیلڈ پیش کی گئی اور روایتی چترالی چغہ اور چترالی ٹوپی کا تحفہ پیش کیا گیا۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ  نے اپنے الوداعی خطاب میں چترال یونیورسٹی کے اساتذہ اور دیگر سٹاف کی لگن ، محنت اور جذبے کو اپنی کامیابیوں میں مکمل حصہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کے دور میں جو بھی کام ممکن ہوئے وہ ٹیم ورک کے بغیر ممکن نہیں تھا۔ اور وہ اپنی کامیابیوں کا کریڈٹ یونیورسٹی کے ملازمین سمیت چترال یونیورسٹی کے دیگر سٹیک ہولڈرز بشمول مقامی سیاسی اور سماجی قیادت کو دیتے ہیں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یونیورسٹی کے ملازمین اسی لگن اور محنت سے کام جاری رکھیں گے۔ صوبے اور وفاق کی سطح پر موجود سیاسی قیادت یونیورسٹی کو بھرپور سپورٹ کریں گے تاکہ یونیورسٹی آف چترال حقیقی معنوں میں اپنے اہداف حاصل کر سکے۔ یونیورسٹی کیمپس کی تعمیر شروع ہونے سے ایک اور سنگ میل عبور ہوگیا ہے ۔ انشاء اللہ یونیورسٹی بہت جلد ملکی سطح پراپنی ایک شاندار شناخت اور پہچان قائم کرے گی۔ وائس چانسلر نے تقریب کے انعقاد پر چترال یونیورسٹی ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صدر بشارت حسین ، ان کی کابینہ ، تمام شرکا اور منتظمین کا خصوصی شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ چترال سے عزت، احترام اور خلوص کے بے شمار رشتے اور بے شمار خوبصورت یادیں لے کر رخصت ہو رہے ہیں جو کہ ان کے لئے کسی بڑے سرمایے سے کم نہیں ۔ تقریب کا اختتام دعائیہ کلمات سے ہوا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔