حالیہ بارشوں کےبعدضلعی انتظامیہ لوئرچترال،پولیس,پاک آرمی سمیت تمام متعلقہ ادارے متحرک ۔

چترال (چترال ایکسپریس)حالیہ بارشوں کے بعد امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لینے اور ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کی تیاریوں کے حوالے سے اجلاس ڈپٹی کمشنر لوئر چترال محمد عمران خان اور ایم پی اے فاتح الملک کی سربراہی میں منعقد ہوئی۔

اجلاس میں ڈی پی او لوئر چترال افتخار شاہ انتظامی افسران ,پاک فوج کے افسران و لائن ڈیپارٹمنٹس کے افسران نے شرکت کی۔
اجلاس میں جاری ریسکیو / کلئیرنس اپریشن ودیگر مسائل سے متعلق افسران کو تفصیلی بریفنگ دی۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ہنگامی قدرتی آفات صورتحال سے نمٹنے کیلئے پیشگی اقدامات، پہلے سے متحرک کردیا گیا ہے۔۔ہنگامی قدرتی آفات موسلادھار بارش صورتحال کے پیش نظرتمام ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز،اسسٹنٹ کمشنرز،ایریگیشن، 1122ریسکیو، ٹی ایم ایز ،ڈبلیوایس ایس سی ،یو ایس ڈی اے ،اور تمام متعلقہ دیگر اداروں کو ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے الرٹ رہنے کے احکامات جاری کر دیے تھے۔جس میں اشیائے خوردونوش،پیٹرول،ڈیزل کی فراہمی اور ساتھ ہی ساتھ پہلے سے بھاری مشینری موقع پرموجود ہیں۔ تاکہ فلڈ کے حوالے سے تمام مشینری تیار رکھیں تاکہ بروقت ہنگامی صورتحال سے نمٹا جا سکے۔عوام الناس اپنے قیمتی جانوں کی حفاظت کے لئے ندی نالوں کے بہاو پر نظر رکھیں اور دریا کی طرف جانے سے گریز کریں۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ سیلابی صورتحال اور سلائڈنگ کے دوران آفیسرز فیلڈ میں موجود ہیں۔ اور تمام اقدامات کی خود نگرانی کی جا رہی ہےتاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعے کا تدارک کیا جا سکے۔ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ اداروں کے افسران کو امدادی سرگرمیوں میں تیزی لانے ,غیر معمولی صورتحال کو مسلسل مانیٹر کرنے، ارد گرد آبادیوں کو صورتحال سے مسلسل آگاہ رکھنے اور ہنگامی صورتحال کے پیشِ نظر ندی نالوں/ خوڑ اور دریا کے کنارے آبادیوں کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی ہدایت جاری کیں۔
ڈپٹی کمشنر نے موجودہ موسلادھار بارش اور ایمرجنسی صورتحال کے پیش نظر تمام محکموں کوہائی الرٹ رہنے اور فلڈ کے حوالے سے تمام مشینری تیاررکھنے کی ہدایات جاری کیں۔تاکہ بروقت ہنگامی صورتحال سے نمٹا جا سکے۔موسلادھار بارش کی وجہ سے ایمرجنسی اور دیگر مسائل کی نشاندہی کے لیے ڈپٹی کمشنر کی ہدایات پر ڈی سی افس میں ایمرجنسی کنٹرول روم کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جہاں شہری ایمرجنسی، سڑکوں کی صورت حال، لینڈ سلائیڈ اور دیگر مسائل کی نشاندہی کے لیے کال کر سکتے ہیں۔ ضلعی انتظامیہ کے افسران اور تمام متعلقہ محکمہ جات مل کر امدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں تاکہ مشکل کی اس گھڑی میں تمام لوگوں کی بروقت مدد کی جائے۔انہوں نےعوام الناس سے غیر ضروری سفر کرنے سے اجتناب کرنے کی گزرش کی ہےتاکہ قیمتی جانوں کی حفاظت ہو

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔