ایسوسی ایشن فار اکیڈمک کوالٹی( آفاق ) کے زیر اہتمام چترال میں ٹیچر آف دی ائیرایوارڈ کی تقریب

چترال (چترال ایکسپریس) ڈپٹی کمشنر چترال لوئر محمد عمران خان نے کہا ہے کہ بچے مستقبل ک سرمایہ ہیں ۔ ان کو ملازم بنانے کیلئے نہیں ایک اچھا انسان بننے کیلئے پڑھائیں اور معیاری تعلیم فراہم کریں تاکہ بعد میں پچھتانا نہ پڑے ۔ معیاری تعلیم کی فراہمی میں آفاق کا بہت بڑا کردار ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز چترال کے ایک مقامی ہوٹل میں ایسوسی ایشن فار اکیڈمک کوالٹی( آفاق ) کے زیر اہتمام2023۔24 میں پبلک سکولوں میں نمایان کردار ادا کرنے والے اساتذہ کی حوصلہ افزائی کیلئے منعقدہ (ٹیچر آف دی ائیر ایوارڈ) کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس تقریب میں چترال میں 72 سکولوں کے 83 مردو خواتین اساتذہ موجود تھے ۔جبکہ بڑی تعداد میں مہمانوں نے شرکت کی۔ڈپٹی کمشنر نے کہابچوں کے شاندار مستقبل کیلئے والدین سے زیادہ اساتذہ کا مثبت کردار انتہائی اہم ہے اور یہ امر قابل تعریف ہے کہ آفاق معیاری تعلیم کی فراہمی اور بچوں کے نقسیات کو سمجھنے اور ان کو ملک کیلئے ایک کارآمد شہری بنانے کیلئے کام کر رہا ہے ۔پاکستان اور چترال کے بچے بہت باصلاحیت ہیں ۔ صرف ان کومعیاری تعلیم اور بہتر رہنمائی کی ضرورت ہے ۔ عبداللہ شاہ شہاب نے اس تقریب کی نظامت کے فرائض انجام دی۔ سنئیر ائریا منیجر آفاق ذوالفقار علی خان نےتقریب میں شرکت پر مہمانوں اور اساتذہ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ آفاق چترال میں معیاری تعلیم کی فراہمی ، نصاب سازی اور بچوں کی ہم نصابی سرگرمیوں کو ابھارنے کیلئے مختلف پروگرامات کاانعقاد کرتی ہے ۔جس میں سکولوں کو اچھی تعلیمی کارکردگی پر ایواراد دینے ، کوئز مقابلے اورکئی دیگر پروگرام شامل ہیں ۔این سی ایچ ڈی کے سابق ڈائریکٹر محمد افضل نے کہاکہ جس طرح ایک نفیس اور مضبوط عمارت کی تعمیر کیلئے مضبوط بنیادکی ضرورت ہوتی ہے ۔ اسی طرح معیاری تعلیم تب ہی کوئی بچہ حاصل کر سکتا ہے ۔ جب بچے کی پرائمری ایجوکیشن اچھی ہو ۔ اس لئے پرائمری کلاسوں کے اساتذہ کی ذمہ داری بہت ہی اہمیت کی حامل ہے اور یہ بہت مشکل کام ہے ۔ انہوں نے چترال کے ماحول میں معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے آج بھی ریسرچ کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔آر پی ایم آفاق ملاکنڈ ڈویژن ماجد علی شاہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ استاد کا پیشہ نہایت محترم ہے یہی وجہ ہے اللہ پاک کے رسول صل اللہ علیہ وسلم نے بھی اپنا تعارف استاد کےطور پرکیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ وقت میں کتابیں تو بہت سے لوگ پڑھتے ہیں لیکن سوشل اور مارل ڈویلپمنٹ نہیں ہے ۔ جاپان کے پاس ایٹم بم نہیں ہے۔ لیکن ان کا ایک اخلاقی معیار ہے کہ پوری دنیا کے لوگ ان پراعتماد کرتے ہیں ۔ تقریب کے دوران نمایان کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے 70 سکولوں اور 83 اساتذہ کو شیلڈ اور سرٹفیکیٹ دیے گئے ۔ جو کہ ڈپٹی کمشنر چترال لوئر محمد عمران خان ،وائس پرنسپل کامرس کالج چترال پروفیسر وجیہ الدین، پروفیسر حسام الدین ، فرید احمد رضا مئیر چترال ،پرنسپل سنٹینل ماڈل سکول چترال شاہد جلال ،صحافی محکم الدین ، مسٹر ذوالفقار علی AKES ،ڈائریکٹر (ر) این سی ایچ ڈی محمد افضل، محمد اسماعیل سیکرٹری ،اقرارالدین پرنسپل حراسکول ایون ،صحافی سید نذیر حسین شاہ،عطا حسین اطہر ایجوکشنسٹ،سعادت اللہ سی ایس ایس آفیسر،اسدالرحمن ،ماسٹرٹرینر آفاق،پرنسپل آئیڈیل سکول کوغذی عتیق الرحمن ، اے ڈی او احمد الدین ،انعام اللہ اور پرنسپل زاہد الدین کے ہاتھوں اساتذہ میں شیلڈ اور سرٹفیکیٹ تقسیم ہوئے ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔