تازہ ترینعنایت اللہ اسیر

گردگان بر گمبد…دعوت و تبلیغ

مراسلہ نگارسے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں:ایڈیٹر


………..تحریر:عنایت اللہ اسیر………

مودی کے متعصبانہ ظالمانہ سکھ مسلمان اور شودر اچھوت دشمن رویے کا ایک علاج جس سے پورا برصغیر پاک و ہند میں امن و سکون خوشحالی اور اطمنان و ترقی کا دور دورہ ہوگا اور ہندوستان پوری دنیا میں پھر سے ایک عظیم اسلامی ایٹیمی ویٹو پاور والی مضبوط ازاد ریاست کے طور پر پوری مسلم دنیا کے پچاس آزاد ممالک کی قیادت کریگی جنگی جنون اسلحہ کے انبار لگانے کے بجایے پاکستان ,انڈیا اور بنگلہ دیش تینون ازاد مسلم ریاستون کے طور پر اپنےاپنے ممالک کے باشندون کی تعمیرو ترقی امن و سکون روٹی کپڑا مکان اور صحت و صفائی تعلیم اورتعمیر کے کامون میں اپنے وسائل استعمال کرکے پوری انسانیت اوراقوام عالم کو راحت و سکون پہنچایینگے
نہ کوئی اچھوت ہوگا نہ شودر نہ برہمن نہ راجپوت بلکہ سب برابری کی بنیاد پر مسلمان بھائی بھائی ہونگے اور علم وننر کے مواقع سب کو یکسان طور پر میسر ہونگے اورقیادت سیادت ہر وہ شہری کرنے کا حقدار ہوگا جس میں قابلت ہوسب ایک دسترخوان پرایک پلیٹ میں کھانا کھاینگےاورکسی کو مندر کےآگے درخت کا پتہ کاٹنے پرذلیل نہیں کیا جائیگا اورپورے ہندوستان کے باشندے کلمہ طیبہ پڑھ کر ایک ہی صف میں نماز پژھینگے
( ایک ہی صف میں کھڑے ہوگئے محمود و ایاز
نہ کوئی بندہ رہا نہ کوئی بندہ نواز)
” انمالممینون اخواتہ”
نہ اچھوت نہ راجپوت نہ برہمن نہ شودر بلکہ سب ہندوستانی بھائی بھائی ہوکر دنیا کی قیادت کرینگے
اس دعوت کو کشمیر سے لیکر بنگال تک تمام 40 کروڑ مسلمان اپنے بہترین اخلاق حسنہ رواداری ہمدردی خدمت اور تمام پسے ہوے پسماندگی غربت اور نسلی بنیادوں پرذلت کے چکی میں پسے ہوے ہندو بھاییوں کے ساتھ بہتریں سلوک اور مالی امداد سے کلمہ طیبہ کی دعوت حق کو پھیلا کر چند سالوں میں پورے ہندوستان کو دین اسلام کے اللہ کے رحمت کے سائے میں لاسکتے ہیں
اور ہندوستان ایک امن و اشتی کا گہوارہ ہوکر نمایان کردار کا حامل ملک ہوگا جس میں نہ کشمیر کی ازادی کی جنگ ہوگی نہ پاکستان ہندوشتان میں اسلحے کی دوڑ ہوگی نہ ایٹیمی جنگ کا خطرہ ہوگا بلکہ پاکستان اور ہندوستان اپنے اپنے حدود میں عظیم مسلم برادرآذاد ریاستوں کے طور پر خطے میں اپنا اذاد کردارادہ کرتے رہینگے
کشمیر کے باشندوں کو یہ ازادی حاصل ہوگی کہ وہ جس مسلم ملک کے ساتھ رہنا چاہیں رہین اور جنت نظیر کشمیر خون میں لت پت رہنے کے بجاے پوری دنیا کے سیاح اس وادی جنت نطیر کی سیر و تفریح کے لیے بلا خوف و خطر ا جا سکین
ہندوستان ہندوستان ہی کے نام سے مکمل اسلامی مسلم ریاست کے طور پر دنیا کے نقشے پر قیادت کرے
پاکستان اور ہندوستان جنگی جنون سے مکمل آذاد ہوکر تعمیر انسانیت کے کاموں میں اپنا کردار ادا کرین
پورے ھندوستان کے باشندوں سے کلمہ طیبہ پڑھ کر احترام ادمیت کے عظیم دین میں داخل ھوکر جنگ وجدل اور ہستی سے نکل کر برابری کی بنیاد پر باعزت اطمان کی ذندگی گذارین
مسلمانان ہندوستان محبت کو عام کرکے دعوت دیں کے کام میں عملی کردار اپنا کر پورے ہندوستان کو ایک کو ایک مضبوط پر امن اسلامی ریاست میں تبدیل کرسکتے ہیں تاکہ کشمیر کے مظالم سے ہمیشہ ہمیشہ کے لیے نجات اور مستقل سروں پر منڈلاتے ہوئے ایٹیمی جنگ کے خطرے سے پورا خطہ مستقل محفوظ ہوجائے
میرا پیام محبت ہے جہان تک پہنچے
علامہ اقبال*
یقین محکم علم پیہم محبت فاتح عالم
جہاد ذندگانی میں یہ ہیں مردوں کی شمشیریں*
دعوت دیں مبیں اپنے عملی بہترین کردار سے

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ مواد

إغلاق