تازہ ترین

استارو روڈ کے عارضی قلیوں کا مغاوضہ نہ ملنے پر بونی میں احتجاجی دھرنا ۔

اپرچترال(ذاکر محمد زخمی)گزشتہ سرمااور برف باری کے موسم میں استارو متبادل روڈ کو بحال رکھنے اور ٹریفک کے نظام کو جاری رکھنے کے لیے استارو کے مقامی 6افراد کو ماہانہ اجرت پر روڈ کو بحال رکھنے کی زمہ داری دی گئی تھی ابتدا میں انہیں چار مہینے کام کرنے کی ہدایت دی گئی تھی بعد میں دو مہینے پورا ہونے پرانہیں بےغیر کسی مغاوضہ دئیے فارغ کردیے گیے۔دو مہینے گزرنے کے باوجود مغاوضہ نہ ملنے پر مذکورہ افراد نے پیر کے روز ایکسین کے دفتر کے سامنے دھرنے پر بیٹھے رہے اور تا حصول مغاوضہ دھرنے دینے پر بضد رہے ان کا کہنا تھا کہ ہم غریب لوگ ہیں انتظامیہ،ایس۔ڈی۔او سی اینڈ ڈبلیو اور دیگر کے کہنے پر دن رات ایک کرکے تورکھو روڈ بحال رکھا جس کا تمام تورکھو کے ڈرائیور اور مسافر بھی گواہ ہیں۔ لیکن آج تک ہمیں مغاوضہ نہ دینا ظلم زیادتی کے مترادف ہے۔بعد وہاں موجود سابق وی سی ناظم شاگرام اور تحریک انصاف تورکھو موڑکھوکے صدر منہاج الدین،سابق یوتھ کونسلر یو سی واشیچ سمیع الدین و دیگر کی کوششوں سے اور ایس ڈی او سی اینڈ ڈبلیو عدنان کی دلچسپی سے ایک تحریری معاہدہ کی رو سے مسئلے کا تصفیہ ہوا۔ جس کے تحت پراجیکٹ منیجر انیس احمد نے تحریری طور پر یقین دلایا کہ مذکورہ مزدوروں کی مزدوری مبلغ ایک لاکھ اسی ہزار روپے 28مئی بروز جمعہ ادا کی جائیگی۔اس یقین دہانی پر وقتی طور پر دھرنا ختم کرکے مزدور اپنے گھروں کو چلے گئیے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔