تازہ ترین

تحصیل کونسل چترال نے مالی سال 2016- 17کا چار کروڑ67لاکھ 48 ہزار روپے کا خسارہ بجٹ متفقہ طور پر منظور کر لیا

چترال ( نمائندہ چترال ایکسپریس) تحصیل کونسل چترال نے مالی سال 2016- 17کا چار کروڑ67لاکھ 48 ہزار روپے کا خسارہ بجٹ متفقہ طور پر منظور کر لیا ۔ بجٹ میں متوقع مجموعی آمدنی کا حجم 15 کروڑ 66لاکھ82ہزار روپے ظاہر کیا گیا ہے ۔ جبکہ اخراجات کا تخمینہ 20 کروڑ 34لاکھ 30ہزار روپے ہے ۔ اسی طرح مجموعی خسارہ 4 کروڑ 67لاکھ48ہزار روپے بتایا گیا ہے ۔ منگل کے روز ضلع کونسل ہال چترال میں کنوئنیر تحصیل کونسل چترال خان حیات اللہ خان کی زیر صدارت بجٹ اجلاس منعقد ہوا ۔ جس میں تحصیل کونسل کے تمام ارکان موجود تھے ۔ تحصیل ناظم چترال مولانا محمد الیاس نے بجٹ پیش کرتے ہوئے کہا ۔ کہ چترال گذشتہ سال سے شدید سیلاب اور بعد آزان زلزلے کی وجہ سے انتہائی مشکلات سے دوچار ہے ۔ سڑکیں ، آبنوشی اسکیمیں ، پلیں ، آبپاشی نہریں سمیت انفراسٹرکچر مکمل طور پر تباہ ہو چکے ہیں ۔ اور عوام کی نظریں عوامی نمایندوں پر ہیں ۔ تحصیل کونسل نے ان ہی مشکلات کو پیش نظر رکھ کر گذشتہ سال بجٹ کا سو فیصد ڈویلپمنٹ اور بحالی پر خرچ کیا ۔ اس لئے چترال صوبے میں شاید وہ واحد ضلع ہے ۔ جس عوامی مسائل کو انتہائی اہمیت دی اور تمام تر بجٹ بحالی کی سکیموں پر لگا دیا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال کے مسائل بہت زیادہ اور آمدن بہت کم ہے ۔ پھر بھی تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن مشکلات پر قابو پانے کی ہر ممکن کو شش کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ یہ تحصیل کونسل کے معزز ممبران پر منحصر ہے ۔ کہ وہ اس خسارے کو پورا کرنے کیلئے کونسی حکمت عملی اختیار کرتے ہیں ۔ بجٹ میں 12 کروڑ 58لاکھ ڈویلپمنٹ کیلئے رکھے گئے ہیں ۔ جبکہ میونسپل ملازمین کی تنخواہوں اور دیگر اخراجات سمیت بجٹ کا حجم 20کروڑ 34 لاکھ ہے ۔بجٹ میں واٹر سپلائی سکیموں پر 25فیصد میونسپل سروسز پر 20 تزین و آرائش پر 5اور دوسرے سکیموں پر صوابدیدی فنڈ کی شکل میں 50فیصد فنڈ خرچ کئے جائیں گے ۔ اس موقع پر بجٹ پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے ممبر تحصیل کونسل گرم چشمہ خوش محمد ،عبد المجید شغور ،حاجی سلطان ارندو ، عبدالقیوم شاہ ، شمشیر خان چیرمین ٹیکسیشن کمیٹی عبدالحق بروز ، محمد علی شاہ ، قاضی فضل معبود ، شیر نذیر منیجر، اقلیتی رکن نظر گئے ، خواتین ممبران فریدہ سلطانہ ، نجمہ ، عبدالسلام اور قسوراللہ قریشی نے اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔ تاہم بعد آزان متفقہ طور پر بجٹ منظور کر لیا گیا ۔



اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

رأي واحد على “تحصیل کونسل چترال نے مالی سال 2016- 17کا چار کروڑ67لاکھ 48 ہزار روپے کا خسارہ بجٹ متفقہ طور پر منظور کر لیا”

اترك تعليقاً

إغلاق