تازہ ترین

مکتوبِ چترال…..قدرتی آفات اور کاروانِ خیر

……..بشیر حسین آزاد……..


کہا جاتا ہے کہ چترال فالٹ(Fault line)پر واقع ہے۔اس جگہ زلزلے بہت آتے ہیں۔زلزلوں کے علاوہ یہاں سیلاب سے بھی تباہی پھیلتی ہے اور لوگوں کو مصائب کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ان مصائب میں جو تنظیمیں مصیبت زدہ لوگوں کی مدد کرتی ہیں۔اُن تنظیموں کو یاد رکھا جاتا ہے۔کاروان خیر ملک کی ایسی تنظیموں میں سرفہرست ہے جو ملک بھر میں بالعموم اور چترال میں باالخصوص مصیبت زدہ لوگوں کی دل کھول کر مدد کرتی ہے۔کاروان خیر کراچی کے درد مند اور مخیر احباب کی تنظیم ہے۔جس کی سرپرستی سیدنوید مصطفی کرتے ہیں۔یہ ایک فلاحی تنظیم ہے جو تھر،جیکب آباد،گلگت،آزاد کشمیر،کالام،چترال اور دوسرے علاقوں میں کام کرتی ہے۔چترال میں کاروانِ خیر نے اپنا کام کالاش ویلیز،بمبوریت،رومبور اور بریر سے شروع کیا۔پہلے مرحلے میں زنانہ دستکاری مرکز اور کمپوٹر سنٹرز کھولے گئے۔اس کے ساتھ ساتھ غریبوں کی مدد کے لئے مختلف منصوبے شروع کئے گئے۔نادار خاندانوں کو سلائی مشینیں اور کپڑے فراہم کی گئیں۔مسجدوں میں واش روم ،وضوخانے تعمیر کئے گئے۔مدرسوں کے لئے قرآن پاک اور کتابیں تقسیم کی گئیں،غریب خاندانوں میں مردانہ کپڑوں کے نئے جوڑے تقسیم کئے گئے۔سردیوں میں کمبل،سویٹرز اور گرم کوٹ کی وافر مقدار ان وادیوں میں تقسیم کی گئیں۔اس طرح فلاحی کاموں کا سلسلہ دوسرے علاقوں میں بھی شروع ہوا۔سیلاب کے موقع پر مصیبت زدہ لوگوں میں اشیائے خوراک کے پیکیج بانٹے گئے۔ایک نیا کام یہ ہوا کہ کاروانِ خیر کی توسط سے متاثرہ علاقوں میں سکولوں کے طلبہ اور طالبات میں ساڑھے آٹھ لاکھ روپے مالیت کےBiscut بسکٹ تقسیم کئے گئے۔زلزلہ کے بعد زلزلہ زدہ علاقوں میں کاروان خیر نے ایک بار پھر اپنے کام کا دائرہ بڑھادیا لوگوں کو مکانات کی بحالی میں مدد دی گئی،نان فوڈ آئیٹم کی تقسیم عمل میں لائی گئی۔کاروان خیر کے کارپروازوں نے دوردراز مقامات پر خود جاکر مصیبت زدہ لوگوں کی مدد کا بیڑا اُٹھایا۔اور دامے،درمے سنجے ان کے ساتھ مکمل تعاون کیا۔دوسری این جی اوز کے مقابلے میں کاروان خیر کاکام لوگوں کو اس لئے پسند آیا کہ اس کام میں کوئی پیچیدگی نہیں ہے۔سادہ طریقے سے مصیبت زدہ لوگوں کی مدد کی جاتی ہے۔علامہ اقبال نے سچ کہا۔
’’میں اس کا بندہ بنوں گا جسکو خدا کے بندوں سے پیار ہوگا‘‘

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق