گورنر خیبرپختونخوا حاجی غلام علی نے یونیورسٹی آف چترال کے مرکزی کیمپس کا سنگ بنیاد رکھا.

چترال(چترال ایکسپریس )گورنر خیبرپختونخوا حاجی غلام علی نے پیر27نومبر کو یونیورسٹی آف چترال کے مرکزی کیمپس کا سنگ بنیاد رکھا۔ اس موقع چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد اور ایس ڈی جی مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن ایچ ای سی سید نوید حسین شاہ بھی گورنر خیبرپختونخوا کے ہمراہ موجود تھے۔
یونیورسٹی آف چترال کے پروجیکٹ ڈائریکٹر انجینئر ضیاء اللہ نے نئے کیمپس کا ماسٹر پلان معزز مہمان خصوصی کے سامنے پیش کیا۔ گورنر خیبرپختونخوا حاجی غلام علی نے وائس چانسلر اور پروجیکٹ ڈائریکٹر کی کاوشوں کو سراہا اور مبارکباد پیش کی ۔ گورنر خیبرپختونخوا اور چیئرمین ایچ ای سی نے یونیورسٹی کے سبزہ زار میں دیودار کا پودا بھی بطور یادگار لگایا۔
اس موقع پر چیئرمین ایچ ای سی نے ایچ ای سی کی جانب سے مالی تعاون سے قائم کردہ نئے یوتھ ڈویلپمنٹ سنٹر اور جدید ترین سمارٹ کلاس روم کا افتتاح کیا، یہ کلاس روم جدید طریقہ تدریس کے لئے تکنیکی طور پر جدید تعلیمی ماحول فراہم کرتا ہے۔
یونیورسٹی آف چترال کے مرکزی ہال میںایک پروقار تقریب کا انعقاد بھی کیا گیا۔تقریب کا باقاعدہ آغاز قومی ترانے سے کیا گیا جس کے بعد وائس چانسلر یونیورسٹی آف چترال پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ اور ڈائریکٹر ایڈمنسٹریشن ڈاکٹر ندیم حسن نے معزز مہمانوں کو روایتی چغہ پہنایا
گورنر خیبرپختونخوا، چیئرمین ایچ ای سی اور یونیورسٹی آف چترال کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ سمیت اہم شخصیات نے اس تقریب کو رونق بخشی۔ پروفیسر ڈاکٹر ظاہر شاہ نے قابل قدر مہمانان گرامی کی تشریف آوری پر بھرپور انداز میں شکریہ ادا کیا۔اپنے خطاب میں انہوں نے یونیورسٹی آف چترال کی کامیابیوں اور درپیش چیلنجز و مسائل کے بارے میں جامع انداز میں معلومات فراہم کیں ۔ وائس چانسلر نے یونیورسٹی آف چترال کو درپیش مالی امور سے متعلق مسائل پر بھی روشنی ڈالی اور چیئرمین ایچ ای سی سے درخواست کی کہ وہ چترال یونیورسٹی کو HEC بجٹ میں شامل کرنے کے لئے ہر ممکن مدد فراہم کریں ۔
اپنے خطاب میں چیئرمین ایچ ای سی مختار  احمدنے دور حاضر میں تعلیم اور تحقیق کے تعلق کی بنیادی اہمیت کو اجاگر کیا نیز معاشرتی ترقی اور نوجوانوں میں جدید طریقہ تعلیم کو مقبول کرنے کے لیے فیکلٹی ممبران کی جانب سے تحقیقی سرگرمیوں کو فروغ دینے کی کاوشوں کی حوصلہ افزائی کی۔ انہوں نے صوبائی حکومت پر زور دیا کہ وہ پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں کو درپیش مسائل بالخصوص مالیاتی چیلنجز کے حل کو اولین ترجیحات میں شامل کریں۔ چیئر مین ایچ ای سی نے یونیورسٹی آف چترال کے لیے غیر متزلزل حمایت اور ان تھک کوشش کا یقین دلایا۔
گورنر خیبرپختونخوا حاجی غلام علی نے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں میں معیار تعلیم کو بلند کرنے اور جدید خطوط پر استوار کرنے کی اہمیت پر اپنا موقف واضح کیا ۔ انہوں نے اس امر پر تشویش کا اظہار کیا کہ تعلیمی میدان میں کثیر سرمایہ فراہم کرنے کے باوجود بنیادی تعلیمی اہداف کا حصول تا حال ممکن نہیں ہو پا رہا ، اس ضمن میں انہوں نے تعلیمی میدان میں تحقیقی سرگرمیوں کو فروغ دینے اور نئے اہداف کے حصول کئے بھرپور کاوشوں کا عزم ظاہر کیا ۔
پروگرام کے اختتام پر گورنر خیبرپختونخوا، چیئرمین ایچ ای سی، اور یونیورسٹی آف چترال کے وائس چانسلر کی جانب سے یونیورسٹی کی ترقی میں اہم کردار ادا کرنے والے علاقے کے قابل قدر شراکت داروں کو اعزازی شیلڈز سے نوازا گیا۔
یونی ورسٹی آف چترال میں منعقدہ ” سنگ بنیاد ” کی یہ پروقار تقریب ، مستقبل کے لئے خطے میں تعلیم اور شعور اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ ترقی کے نئے در وا کرنے کا ایک ایسا وسیلہ بھی ثابت ہو گی جو حکومتی عہدیداران، سیاسی رہنماؤں اور مقامی افراد و معاشرے کے اجتماعی عزم کی عکاسی کرتی ہے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔