تازہ ترین

چترال ٹاؤن کے لئے بجلی کی فراہمی کا وعدہ پورا نہ ہونا قابل تشویش ہے۔نوجوانان چترال

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس ) نو جوانانِ چترال، رضی الدین، نذیر احمد، اسرا ر الدین کسانہ ، معسود الرحمن ، سلطان محمد شیر، احسان الٰہی،پیر کرم الٰہی قادری ، نیاز اے نیازی وغیرہ نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ چترال ٹاؤن میں بجلی کے فراہمی کے سلسلے میں SRSP چترال نے کامر س کالج چترال کے سبزا زار میں ایک بڑے جلسے میں دسمبر 2015 تک چترال ٹاؤن کو بجلی فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا۔مگر SRSP چترال اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام رہا۔موقع پر کام کی رفتار کو دیکھ کر اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ یہ منصوبہ دسمبر2016 تک مکمل نہیں ہوگا۔انہوں نے ا س امر پر تشویش کا اظہار کیا کہ صوبائی حکومت چترال میں چھوٹے پن بجلی گھروں کی تعمیر کے لئے 1 ارب روپے ادا کئے ہیں۔ مگر تا حال ڈھائی سال گزرنے کے با وجود چترال میں ایک بھی بجلی گھر تعمیر نہیں کیا جا سکا۔انہوں نے کہا کہ حالیہ سیلابوں کی وجہ سے ریشن ہائیڈل پاؤر کئی مہینوں سے خراب ہے اس پر ابھی تک کام شروع نہیں ہوا جسکی وجہ سے اپر چترال کے عوام کئی مہینوں سے بجلی سے محروم ہیں۔ انہوں نے ضلعی اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ان منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے کے لئے اقدامات کئے جا ئیں۔نو جوانانِ چترال نے اس بات پر بھی افسوس کا اظہار کیا کہ ابھی تک ضلعی قیادت MNA, MPA,s ڈسٹرکٹ ناظم ، تحصیل ناظم ما ضی کی روایات کو بر قرار رکھتے ہو ئے خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں۔آخر میں ا نہوں نے کہا کہ اگر چترال کے مسائل اسی طر ح بر قرار رہے تو ہم نو جوانانِ چترال احتجاج پر مجبور ہو نگے ۔ جسکی تمام تر ذمہ داری ضلعی انتظامیہ اورسیاسی قائدین پر عاعد ہو گی!!!



اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

اترك تعليقاً

إغلاق