تازہ ترین

جمعیت طلباء اسلام کے زیر اہتمام پیغام جمعیت ودستار فضیلت کانفرنس ،چترال سے قائدین کی شرکت

لاہور(نمائندہ چترال ایکسپریس)گذشتہ رات جامعہ فاروقیہ تحفیظ القرآن بادامی باغ لاہور میں جمعیت طلباء اسلام چترال (حلقہ لاہور)کے زیر اہتمام’’ پیغام جمعیت ‘‘و’’دستار فضیلت‘‘ کانفرنس کا انعقاد کیا گیا ۔ جس میں کثیر تعداد میں طلباء اورعلماء اورسیاسی قائدین نے شرکت کی ۔ اوراس کے علاوہ چترال سے بھی جمعیت علماء اسلام کے قائدین مولاناقاری عبدالرحمن قریشی سابق امیر جمعیت علماء اسلام ضلع چترال ، مولانا محمد یوسف تحصیل ناظم سب ڈویژن مستوج ،مولانا محمد الیاس تحصیل ناظم چترال نے بھی خصوصی طورپر شرکت کی۔ قاری وقار احمد چترالی امام مسجد جامعہ منصورہ نے تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی ۔ شفیق الرحمن نے نعت شریف پیش کیا۔اسٹیج سیکرٹری کے فرائض محمد عبدالفتاح سرانجام دیا۔ خطاب کرنے والوں میں مولانا امجد خان (قائم مقام جنرل سیکرٹری جمعیت علماء اسلام پاکستان )،مولانا الیاس ،مولانا یوسف ، مولانا عزیز اللہ ،مولانا محمد ولی ،مولانا ،حافظ شجاع الدین (امیر جمعۃ طلباء اسلام چترال حلقہ لاہور)،قاضی حمید الرحمن ،وغیرہ شامل تھے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مولانا امجد خان نے کہا کہ ’’میں اپنی طرف فارغین دورہ حدیث شریف کوسلام ومبارک باد پیش کرتاہوں ،آپ انتہائی خوش نصیب لوگ ہیں ۔اگرآپ سے کوئی پوچھے تو آپ کون ہیں ؟تو کہنا کہ میں الحمد اللہ کلام اللہ کا حافظ ہوں اوراپنے آپ کو احساس کمتری کا شکار نہ کریں ، نبیﷺ کی مردہ سنتوں کو زندہ کیجئے ۔جو نبیﷺ کی مردہ سنت کو زندہ کرتاہے تو اللہ تعالی اسے سو شہیدوں کا ثواب عطاکرتاہے ۔ ‘‘اس کے علاوہ ان کا کہنا تھا کہ ’’دینی مدارس پہلے بھی قائم تھے ،آج بھی قائم ہیں اورتمام ترسازشوں کے باوجود قیامت تک قائم ودائم رہیں گے ۔ ‘‘اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ ’’یہ جمعیت علماء اسلام کا طرہ امتیاز ہے کہ ہمارے اکابرین نے ہمیشہ آئینی اورقانونی تحریکیں چلائی ہیں ۔ قادیانیوں کے خلاف تحریک چلی ہمارے دس ہزار افراد شہید ہوئے مگر ہم نے کسی قادیانی کے گھر کو پتھر تک نہیں مارا ۔‘‘تحصیل ناظم مولانا محمد الیاس نے اپنے خطاب میں طلباء پر زور دیا کہ وہ قرآن وحدیث پر ریسرچ کریں ۔اورمحنت سے علم حاصل کریں اپنا قیمتی وقت ضائع نہ کریں ۔اگر محنت سے علم حاصل کریں گے تو فراغت کے بعد میدان آپ کے لئے خالی ہیں ۔ اورعزت بھی ان علماء کی ہے جو محنت سے علم حاصل کرتے ہیں اوراپنے وقت کو قیمتی بناتے ہیں ۔ مولانا محمد یوسف تحصیل ناظم سب ڈویژن مستوج نے اپنے خطاب میں کہاکہ : طالب علمی کا زمانہ بادشاہی کا زمانہ ہے اس کی قدر اس وقت آپ کو معلوم ہوگی جب آپ لوگ عملی زندگی میں جائیں گے مگر اس وقت کف افسوس کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا اس لئے محنت نے علم حاصل کریں ۔وقت کو قیمتی بنائیں ۔وقت کا ضیاع ناشکری ہے اورعلمی زندگی کی ناشکری بہت سخت ہے ۔ اس کے علاوہ انہوں نے طلباء پر زور دیا کہ وہ اپنے نظریے اورجماعت کے دستور ،منشور سے باخبر رہیں اوراس پر عمل کریں ۔وقت شناسی اورمردم شناسی سے اپنا پیغام لوگوں تک پہنچائیں ۔ چترال کے حوالے سے انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ چترال ہم وسائل نہ ہونے اورمسائل کے انبار کے باوجود جو ترقیاتی کام کررہے ہیں وہ روز روشن کی طرح عیاں ہے ۔ہم نظام کو تبدیل کرنا چاہ رہے ہیں سب ڈویژن مستوج کو منشیات سے پاک کرنے کا عزم کیا ہے اس سلسلے میں 13منشیات فروشوں کے خلاف ہم نے کاروائی کرکے ان کو گرفتار کرلیاہے ۔ اورانشاء اللہ جلد ہی چترال کو منشیات سے پاک کریں گے ۔ ان کا کہنا تھا کہ پہلے سالا نہ سڑکوں کی صفائی اورمرمت کے لئے چارکروڑ 31لاکھ روپے سب ڈویژن کو ملتے تھے مگر ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوتاتھا۔ الحمد اللہ ہم سڑکوں کی تعمیر اورمرمت پر بھی خصوصی توجہ دے رہے ہیں ۔ تقریب رات 2:30تک جاری رہی ۔تقریب شرکت کرنے والے دوسرے مہمانوں میں مولانا قاری شیر زمان ، مولانا عبدالصمد ، مولانا مفتی رشید احمد ، مولانا قاری کمال الدین ، قاری محمد مالک انس ،چترال کے مشہور صوفی شاعر دول ماما،قاری جواد احمد سیالکوٹی ،قاری اعجاز احمد،قاری برھان الدین وغیرہ شامل تھے ۔ پروگرام میں چترال سے تعلق رکھنے والے مختلف مدارس سے فارغ ہونے والے فضلاء دورہ حدیث کی دستار بندی کی گئی ۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

اترك تعليقاً

إغلاق