چترال پریس کلب کے صحافیوں کی ڈی سی چترال سے ملاقات ،عوامی مسائل سے آگاہ کیا

چترال ( محکم الدین ) ڈپٹی کمشنر چترال ارشد قیوم برکی نے کہا ہے کہ عوام کے لئے جتنی آسانی اور سہولت فراہم کر سکتے ہیں اس میں کسی قسم کی تاخیر یا کمزوری نہیں کی جائے گی کیونکہ یہ منصب عوام کی خدمت کیلئے ہمیں ملی ہے ۔ چترال کے عوام کو سابقہ طریقہ کار کے مطابق گندم ہی ملنی چاہیئے ۔ لیکن ہمیں مجبورا صوبائی حکومت کے احکامات پر عمل کرتے ہوئے ملوں کو بھی گندم فراہم کرنا پڑ رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چترال پریس کلب کے صدر ظہیرالدین کی قیادت میں صحافیوں کے وفد کی تعارفی ملاقات کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریلیف عبیداللہ ،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ( فنانس اینڈ پلاننگ) انور اکبر اور اسسٹنٹ کمشنر چترال عاطف جالب موجود تھے ۔ صحافیوں نے چترال میں لوگوں کو درپیش آٹے کے بحران کے حوالے سے بات کی ۔ اور کہا کہ چترال کے گرین گوداموں سے گندم کی خریداری کا ایک مثبت نظام موجود تھا ۔ جب سے چکی اور مل کیلئے کوٹے کا سلسلہ چل پڑا ہے ۔ تب سے بحرانی کیفیت شروع ہو چکی ہے ۔ ہمارے سابق ایم این اے مرحوم شہزادہ محی الدین نے جوٹی لشٹ چترال میں فلور مل کی تعمیر یہ کہہ کر روک دی تھی ۔ کہ اس مل کی تعمیر کے بعد چترال میں لوگ گندم خرید نہیں سکیں گے ۔ اور فلور ملوں و چکیوں کے ہاتھوں یرغمال ہو گے ۔ جن کی بات اب سو فیصد حقیقت بن چکی ہے ۔ ڈپٹی کمشنر نے اس بات سے اتفاق کیا اور کہا ۔ کہ ایک سسٹم کی موجودگی میں فلور ملوں کی تعمیر سے علاقے کے لوگوں کو سہولت ملنے کی بجائے مزید زحمت اٹھانی پڑ رہی ہے ۔ لیکن ہم ملوں کوگندم کی فراہمی مکمل طور پر نہیں روک سکتے ۔ کیونکہ یہ صوبائی حکومت کا حکم ہے۔ ہم حتی المقدور عوام کو سہولت دینے کی کوشش کریں گے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس کیلئے صوبائی سطح پر نمایندگان ہی کوئی رول ادا کر سکتے ہیں ۔ ڈی سی چترال نے کہا کہ لواری سے اس طرف منفرد لوگ ہیں اور میں نے چترال کو انتہائی شائستہ اور قابل قدر پایا ۔ انہوں نے صحافیوں سے کہا کہ چترال کے مسائل کے حل میں ہماری رہنمائی کے ساتھ ساتھ ہمارے ساتھ تعاون کریں ۔ نشست میں ایون کالاش ویلیز روڈ کی لینڈ کمپنسیشن کی آدائیگی کے حوالے سے بھی بات ہوئی جس پر انہوں نے اسسٹنٹ کمشنر کو ہدایت کی ۔ کہ ہماری طرف سے بالکل تاخیر نہیں ہونی چاہئے ۔ اور متعلقہ تحصیلدار جلد از جلد آدائگیوں کیلئے کام مکمل کرے ۔ ڈپٹی کمشنرنے اس موقع پر حالیہ کالاش سنو سپورٹس فیسٹول میں صحافیوں کی شرکت کیلئے سہولیات کی عدم فراہمی کا نوٹس لیا  اور آیندہ اس قسم کے ایونٹ میں انہیں سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات دیں ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔