تازہ ترین

وزیراعظم پاکستان کے جلسے کو چندبیمار ذہن کے سیاستدان اور سوشل میڈیا کے نام نہاد تعلیم یافتہ گٹھ جوڑ کر پیش کررہے ہیں۔

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)یوتھ کونسلر ویلج کونسل ریشن انیس الرحمن نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کا جلسہ چترال کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ تھا۔جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ چترال کے عوام میاں محمد نواز شریف کو اپنا حقیقی رہنما سمجھتے ہیں۔چترال کے باشعور عوام یہ بھی جانتے ہیں کہ یونیورسٹی ،جدید ہسپتال،روڈز اور بجلی ایک پسماندہ علاقے کے لیے کتنی ضروری ہے اور یہ بھی جانتے ہیں کہ یہ کام صرف میاں نواز شریف کررہا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے جلسے میں کہا تھا ’’کہ مجھے چترال کے لوگوں سے بہت پیار ہے ماشاء اللہ چترال کے لوگ اردو بھی جانتے ہیں اور جب یونیورسٹی بنی گی تو سب انگریزی بھی بولینگے‘‘ ۔انیس الرحمن نے کہا کہ چند بیمار ذہن کے سیاستدان اور سوشل میڈیا کے نام نہاد تعلیم یافتہ وزیر اعظم کے جلسے کوگٹھ جوڑ کر پیش کررہے ہیں۔میرا چترال کے ان چند بیمار ذہن کے سیاستدانوں اور سوشل میڈیا کے نام نہاد تعلیم یافتوں سے گذارش ہے کہ چترال کے باشعور عوام کو بیوقوف بنانے کی ناکام کوشش نہ کریں تو بہتر ہے۔میاں محمد نواز شریف سیاست کو عبادت سمجھ کر کرتے ہیں جس کا ثبوت اُنہوں نے چترال میں آکر سیاست سے بالاترہوکر اربوں روپیہ کے میگاپراجیکٹ کے اعلانات کرکے چترال کے باشعور عوام کا دل جیت لیا اور چترال کے عوام ان کاموں کا بدلہ2018کے الیکشن میں ووٹ کی طاقت سے دینگے۔اور چند بیمار ذہن کے سیاستدانوں اور سوشل میڈیا کے نام نہاد تعلیم یافتوں کو شرمندگی ہوگی۔


اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق