چترال سے تعلق رکھنے والے دو افراد کو پشاورمیں نشے سے علاج اور بحالی کے بعد سوشل ویلفئیر ڈیپارٹمنٹ نے ان کے گھر وں میں پہنچادیا

چترال ( نمائندہ چترال ایکسپریس ) گزشتہ روز چترال سے تعلق رکھنے والے دو افراد کو پشاورمیں ہیروین کی نشے سے علاج اور بحالی کے بعد سوشل ویلفئیر ڈیپارٹمنٹ نے ڈپٹی کمشنر لویر چترال انوارالحق کی ہدایت پر ان کے گھر وں میں پہنچاکر ان کے والدین کے حوالے کردیا۔ ڈسٹرکٹ افیسر سوشل ویلفئیر، ویمن امپاورمنٹ اینڈ اسپیشل ایجوکیشن نصرت جبین نے بتایاکہ ان کے محکمے کے اہلکار وں نے پشاور میں ضلعی انتظامیہ سے ان افراد کو اپنی سپردگی میں لینے کے بعد اپنے محدود وسائل میں سے خرچ برداشت کرکے توقیر کو خورکشاندہ اور حبیب الرحمن کو ارندو میں ان کے والدین تک پہنچادیا جبکہ ڈوم شوغور سے تعلق رکھنے والے شاکر اللہ کو پہلے ہی ان کے گھروالوں نے پشاور سے ریسیو کیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ ڈائریکٹر سوشل ویلفیر خیبر پختونخوا خالد اقبال خٹک کی خصوصی ہدایت پر ان کا محکمہ ان افراد کو نارمل زندگی گزارنے میں مدد دینے کے لئے کوشش کررہی ہے۔ انہوں نے سول سوسائٹی پربھی زور دیاکہ ان نشے کی لعنت میں مبتلا ان بحال شدہ افراد کو نارمل زندگی گزار نے اور ان کو دوبارہ اس لت میں مبتلا ہونے سے بچانے کے لئے اپنا کردار اداکرے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔