چترال لوئر

ایم پی اے سلیم خان کی طرف سے چترال کے صوبائی اسمبلی کی نشست کی بحالی کے لئے قرارد اد صوبائی اسمبلی میں اتفاق رائے سے منظور

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)ایم پی اے سلیم خان نے کی طرف سے ایک اہم قرارداد خیبر پختونخواہ میں چترال کے صوبائی اسمبلی کی نشست کی بحالی کے سلسلے میں صوبائی میں پیش کی گئی جسے اتفاق رائے سے منظور کیا گیا۔قرار داد میں کہا گیا ہے کہ حالیہ مردم شماری کے بعد نئے حلقہ بندیوں کا سلسلہ ہونے جارہا ہے مختلف میڈیا کے ذریعے سننے میں آیا ہے کہ ضلع چترال سے صوبائی اسمبلی کا ایک سیٹ کسی دوسرے ضلع کو دی جارہی ہے۔صوبائی اسمبلی کی ایک انشست کو کم کرنے سے ضلع چترال کی محرومیوں اور پسماندگی میں مزید اضافہ ہوگا۔رقبے کے لحاظ سے ضلع چترال صوبہ خیبر پختونخواہ کا سب سے بڑا ضلع ہے اور14850مربع کلومیٹر پر پھیلا ہوا ہے ضلع چترال کے عوام شدید پریشانی کے عالم میں ہیں اگر اس طرح ہوا تو عین ممکن ہے کہ چترال کے عوام جنرل الیکشن 2018سے بائیکاٹ کریں۔لہذا یہ اسمبلی صوبائی حکومت سے سفارش کرتی ہے کہ وہ وفاقی حکومت سے اس امر کی سفارش کرے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان چترال کے جغرفیائی حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے دونوں صوبائی اسمبلی کی نشستوں کو بحال رک

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

زر الذهاب إلى الأعلى