چترال لوئر

سیاسی وسماجی کارکن عنایت اللہ اسیر کاگورنر کے پی کے اقبال ظفر جھگڑا سے چترال میں ہائی سیکنڈری بورڈ کے قیام کی اپیل

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)چترال کے سیاسی وسماجی کارکن عنایت اللہ اسیر نےگورنر کے پی کےاقبال ظفر جھگڑہ سے خصوصی اپیل اور درخواست کرتے ہوئے کہا ہے کہ چترال کے 40000 طلبا وطالبات کےانٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری امتحانات میں داخلےاورامتحانات کوآسان بنانے کے لیے چترال میں ہی ہائی سیکنڈری بورڈ کے قیام کا اعلان کرکے چترال کے علم دوست عوام الناس کا دل جیتے.چترال چنکہ رقبے کے لحاز سے 14850 مربع کلومیٹر پر پھیلا ہوا بہت بڑا ضلع ہے کی ایک ہائی اسکولوں کا فاصلہ چترال شھر سے 100,200 کلو میٹر ہے سرکاری ہائی اسکولوں کے علاوہ درجنون پرایویٹ ہائی سکول چترال کے دور دراز دیہات میں واقع ہیں جہاں سے طالبات اورطلبا کے داخلے اور اور لوازمات کو پشاور بورڈ سے پورا کرنا مشکل ہوگیا ہے اخراجات ان داخلہ فارم اور داخلے کے رقومات بنکوں تک بروقت پہنچانا وقت طلب اور دقت اور مشکل ہوجاتا ہے خاص کر پرایویٹ امتحان دینے والے طلبا اور طالبات انتہای مشکل حالات سے دوچار رہتے ہیں اور ان مشکلات اور کثیر اخراجات کے سبب سے بہت سے طلبا وطالبات تعلیم سے محروم رہ جاتے ہیں دوران امتحانات سپر ٹنڈنٹ اور ممتحن حضرات کو بھی انتہائی تکالیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ چترال میں انٹرمیڈیٹ بورڈ کے قیام سے محکمہ تعلیم کو کسی قسم کے اضافی اخراجات نہیں اٹھانی پڑیگی چترال میں انٹر میڈیٹ اینڈ سیکینڈری بورڈ بہ ہونے کی بنا پر ہزاروں طلبا وطالبات میٹرک کے امتحانات میں داخلہ لینے سے محروم رہتے ہیں صوبائی حکومت اورانجناب کے اس تاریخی اور اہم قدم اٹھانے سے چترال کے باشندے آپ کے ممنون احسان رہیں گے اور چترال جسکا درجہ صوبے میں نمبر 1 اور داخلے کے لحاظ سے بھت بہتررہا ہے اس قدم کے بعد سو فیصد کے درجے پر پہنچ جایئگا اُنہوں نے کہا کہ یہ کتنے ظلم کی بات ہے کہ ہائی سکول ہرچین اورہائی سکول یارخون سے Un fair mean میں انے والا طالب علم یا کوئی طالبہ کن مشکلات سے پشاور بورڈ میں پیشی بگتانےآتے رہے ایک بچی یا بچے کے ساتھ اسکا باب بھائی نےضرورآناہوتا ہےاخراجات کے ساتھ ساتھ مشکلات کس حد تک برداشت کرنے پڑتےہیں گورنرخیبرپختونخوااس صوابدیدی اختیارکواس انتہائی معقول,قانونی,اورچترال کےلاکھوں باشندوں کے مفاداورتعلیم کےحصول کوآسان بنانےکےاس قدم کواُٹھا کر تاریخ میں نام کماسکتے ہیں اُنہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف کے چترال دورے سے پہلےاگرچترال میں انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکینڈری بورڈ کا قیام عمل میں لایا گیا تو چترال کے دورے کو شانداراورجانداربنانےمیں نمایان کردار کا حامل ہوگا انہی دنوں چترال کے دور دراز کے پرائیمیری سکول اور مڈل سکول کے طالبات و طلبا کو میلوں دور سنٹر میں امتحان دینے کے لیےارڈر ہوا ہےجو اس وسیع علاقے سے بلکل نا واقیفیت کانتیجہ ہے چترال انٹر میڈ یٹ اینڈ سکنڈری بورڈ کا قیام وقت کی انتہای اہم ضرورت ہے اور یہ مطالبہ چترال کے سو فیصد عوام کا ہے

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

زر الذهاب إلى الأعلى